Behtar Tarz e zingdagi lambi umer

Go down

Behtar Tarz e zingdagi lambi umer

Post by tanbukhari on Thu Sep 18, 2008 10:43 am

بہتر طرز زندگی، لمبی عمر




تبماکو نوشی ، مسلسل ورزش، صحت مند کھانا اور اپنے وزن کا خیال رکھنے سے جان لیوا بیماریوں سے 55 فیصد تک بچا جا سکتا ہے
ایک تحقیق کے مطابق اگر خواتین صحت مند طرز زندگی گزاریں تو وہ وقت سے پہلے ہونے والے موت کے خطرے کو آدھا کر سکتی ہیں۔
تبماکو نوشی، مسلسل ورزش، صحت مند کھانا اور اپنے وزن کا خیال رکھنے سے جان لیوا بیماریوں سے 55 فیصد تک بچا جا سکتا ہے۔

صحت مند طرز زندگی سے کینسر سے ہونے والی اموات 44 فیصد تک جبکہ دل کی بیماریوں سے ہونے والی اموات پر 72 فیصد تک پر قابو پایا جا سکتا ہے۔

اس تحقیق میں تقریباً اسّی ہزار نرسوں کی سفارشات پر مبنی ہے۔ تحقیقی رپورٹ برطانیہ کی میڈکل جرنل کی ویب سائٹ پر شائع کی گئی ہے۔

چوبیس سال کی اس تحقیق میں 8882 اموات میں سے 28 فیصد تمباکو نوشی کے سبب جبکہ 55 فیصد تمباکو نوشی کے ساتھ ساتھ ، زیادہ وزن ، کم ورزش اور خراب خوراک کے سبب ہوئی ہیں۔

تحقیق میں پایا گیا کہ زیادہ شراب پینا بھی ان اموات میں ایک اہم وجہ رہی لیکن جو خواتین ایک دن میں ایک یا دو ڈرنکس پیتی ہیں ان میں ان خواتین کے برعکس دل کی بمیاریاں کم پائی گئي جو بالکل شراب نہیں پیتی ہیں۔

محقق برگہیم اور وومین ہاسپٹل اور ہارورڈ میڈیکل سکول کے ڈاکٹر وین ڈیم نے نتائج کو مثبت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کم شراب نوشی کے مثبت نتائج سے لوگوں کو زیادہ شراب نوشی کی طرف بڑھنے کا سگنل نہیں ملنا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ کم مقدار میں شراب نوشی سے دل کی بیماریوں کے خطرات تو کم ہوتے ہیں لیکن اسی تحقیق میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ جو لوگ بہت زیادہ مقدار میں شراب نوشی کرتے ہیں ان میں کینسر ہونے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

ڈاکٹر وین ڈیم کے مطابق اگر اس مصروف زندگي میں لوگ اپنی خوراک کا خیال رکھیں اور کام پر یا پھر خریداری کے لیے پیدل چل کر جائيں اور سب سے زیادہ ضروری ہے کہ تمباکو نوشی نہ کریں تو تو آسانی سے صحت مند زندگی گزاری جا سکتی ہے۔

ڈاکٹر وین ڈیم کے مطابق ان کی رپورٹ میں پیش کی گئی سفارشات مردوں اور عورتوں دونوں کے لیے دی گئی ہیں۔

اس تحقیق میں 77782 خواتین کو شامل کیا گیا جن کی عمر 34 سے 59 برس کے درمیان تھی۔ ان لوگوں نے اپنی طرز زندگی سے متعلق تفصیلات دیں۔

در اثنا برٹش ہارٹ فاؤنڈیشن کی جانب سے کی گئی ایک تحقیق کے مطابق جو خواتین ڈائبٹیز یا شوگر کی مریض ہیں اگر وہ مسلسل ورزس کرتی ہیں تو وہ انسیولن کی پیداوار پر قابو کر سکتی ہیں۔
avatar
tanbukhari
Co-Admin
Co-Admin

Male Number of posts : 834
Age : 29
Location : Lahore
Registration date : 09.09.2008

View user profile http://urdu-pak.co.cc

Back to top Go down

Back to top


 
Permissions in this forum:
You cannot reply to topics in this forum